Ads (728x90)

واشنگٹن: امریکی سی آئی اے کی رپورٹ نے پاکستان کے خلاف بھارتی عزائم کا بھانڈا پھوڑدیا ہے جس کے مطابق بھارتی وزیراعظم اندراگاندھی پاکستان کو ایٹمی طاقت بننے سے روکنے کے لیے اس کے ایٹمی مراکز پر حملے کا منصوبہ رکھتی تھیں۔

امریکی سی آئی اے کی جانب سے 8 ستمبر 1981 کو جاری خفیہ دستاویز کے مطابق جب امریکا پاکستان کو ایف 16 طیارے دینے پر حتمی غور کررہا تھا عین اسی وقت اندرا گاندھی پاکستانی ایٹمی مراکز کو نشانہ بنانے پر غور کررہی تھیں۔

سی آئی اے کی 12 صفحات پر مبنی یہ رپورٹ رواں سال جون کو سی آئی اے ویب سائٹ پر جاری کی گئی تھی جس میں تحریر ہے کہ اندرا گاندھی کو یقین تھا کہ اسلام آباد ایٹمی ہتھیاروں کی تیاری کے قریب پہنچ چکا ہے اور بموں کے لیے پلوٹونیم بنارہا ہے اور اسی بنیاد پر انہوں نے بھارتی ایٹمی تجربات کی تیاری بھی شروع کرائی تھی جس کے لیے فروری 1981 میں راجستھان میں بڑے پیمانے پر انتظامات اور نقل مکانی شروع ہوئی تھی اور 40 کلوٹن کا ایٹم بم کا تجربہ تیار تھا۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ اس دوران اندرا گاندھی کا خیال تھا کہ پاکستان اگر اگلے 2 سے 3 ماہ میں ایٹمی طاقت بننے کے قریب تر پہنچتا ہے تو اس پر فوجی حملے کا فیصلہ مزید پختہ کیا جائے جس میں خصوصاً ایٹمی مراکز پر حملے شامل ہوں گے۔

ایک تبصرہ شائع کریں