Ads (728x90)

نیویارک.:فیس بک استعمال کرنے والوں کے لیے اہم خبر ہے کہ اب اُن کی قرضے کی درخواست منظور ہونے کا فیصلہ ، فرینڈ لسٹ میں موجود افراد کی ساکھ پر ہوگا۔ کہتے ہیں انسان اپنی صحبت سے پہچانا جاتا ہے، چنانچہ فیس بک استعمال کرنے والے اب نہ صرف اپنی فرینڈ لسٹ میں موجود لوگوں سے جانے جائیں گے، بلکہ انہیں سوشل میڈیا فرینڈز کی ساکھ کو سامنے رکھتے ہوئے ہی قرض مل سکے گا۔ جی چونکیے نہیں، ایسا ہوسکتا ہے کیوں کہ فیس بک جلد ہی ایسا آپشن شامل کرنے جارہا ہے۔ فیس بک نے دو ہزار دس میں اسپیمز روکنے کے لیے چالیس ملین ڈالرز مالیت کے کچھ patents خریدے تھے جس کے ڈاکیومنٹس میں یہ پیرا گراف بھی شامل ہے کہ اس patent کے تحت جب کوئی فرد لون کی درخواست دیتا ہے تو قرض دینے والا درخواست گذار کے سوشل نیٹ ورک میں موجود افراد کی کریڈٹ ریٹنگ کی چھان پھٹک بھی کرے گا، اگر ان کی اوسط کریڈٹ ریٹنگ معیاری ہوئی تو لون پراسس ہوگا ورنہ درخواست مسترد کردی جائے گی ۔ آسان لفظوں میں سن لیجئے کہ فیس بک یوزر کا قرض صرف اِس بنیاد پر بھی مسترد ہوسکتا ہے ، کہ ان کے فیس بک فرینڈز ڈیفالٹر ہیں ۔تو جناب وقت آگیا ہے کہ گلے شکووں کی بنیاد پر نہیں ، بلکہ بزنس پوائنٹ آف ویو سے اپنی فرینڈ لسٹ کو اپ دیٹ کرلیا جائے۔

ایک تبصرہ شائع کریں